خدا کا شکر ھے جس نے کائنات کی بہترین خلقت کو پنجتن کے سانچے میں اپنے نور سے پُر نور کر دیا

شکر ھے اس ذات کا جس نے منزلِ سعادت پر خالق کی چاھت کو ہدایت کے اصولوں پر علم کےنزول سے اپنی طرف دیکھنے والوں کو بصیرت سے روشناس کیا اور یوں دین کو دنیا اور دنیا کو دین سے منسلک کر کے اپنے پسندیدہ لوگوں میں لوگ چُنے اور اُن کو منزلِ امامت لئے نبوت پر فائز کر کے علم کو اپنی میراث بنایا،اور میراث کو علماء فقہ اور علم رکھنے والوں کو محافظ بنا کر حفاظت پر مامور کر دیا.

بس یہی علماء آج زینتِ الہِی میں دھلے علمِ رہبری میں سجے غیبتِ امام میں لوگوں کو راہ
دکھانے والے اور راہ کو محمدُ آلِ محمد کی درس گاہ بنانے والے ٹہرے.

یہ علم اور فقہ بلا شبہ عین اللہ کی مانند درسگاہ محمدُ آلِ محمد ھیں ،اور ان کی زندگی کا ھر لمحہ دین کی ترویج اور لوگوں کی اصلاح پر مرکوز ھے.

بلاشبہ آپ بھی ایک ایسی ھی ذات کے وجود سے جڑے شعور میں دھلے زینتِ محمد و آلِ محمد کے علمبردار ھیں، جن کی موجودگی ھی فقط نورِالہِی کا بشر انسر ھے.

مولا آپ کے علم کو تقویت دے اور شفاِ کاملہ عطا فرمائے، تاکہ یہ خطہ عرض آپ کی علمی تربیت سے اپنے علوم میں اضافہ کرتا رھے(آمین)
( ڈاکٹررضا)